ورسیزکمیونٹی پاکستان کے لیے ہر قسم کی قربانی دینے کو تیار ہے: مقررین

لندن ۔ نمائندہ خصوصی ۔ گزشتہ دنوں یو کے پاکستان بزنس کونسل کی جانب سے جشن آزادی کے حوالے سے ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا جس میں نہ صرف برطانیہ بھر بلکہ پوری دنیا سے خواتین و حضرات کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ کرونا کے حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے اور احتیاط کرتے ہوئے یہ پروگرام آن لائن کیا گیا ۔ اس پروگرام میں شیڈو ڈپٹی لیڈر ہاؤس آف پارلیمنٹ افضل خان ایم پی ۔ لارڈ نذیر احمد ۔ سابق وفاقی وزیر اور خرم دستگیر خان ۔ چیئرمین یو کے پاکستان بزنس کونسل ایمبیسیڈر جاوید ملک ۔ سابق چیئرمین اورسیز پاکستان فاؤنڈیشن بیرسٹر امجد ملک ۔ سابق صدر یو کے پی سی سی آئی ڈاکٹر غلام مرتضی ۔ صدر یو کے پاکستان بزنس کونسل برطانیہ سلیم شیخ ۔ صدر یو کے پاکستان بزنس کونسل پاکستان خورشید برلاس اور سیکرٹری جنرل یو کے پاکستان بزنس کونسل اے حق نےخطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان بہت سی قربانیوں کے بعد حاصل ہوا ہے جب بھی پاکستان کو ہماری ضرورت پڑے تو اورسیزکمیونٹی ہمیشہ پاکستان کے لیے ہر دم ہر قسم کی قربانی دینے کے لیے تیار رہی ۔ مقررین نے کہا کہ ماضی میں جب بھی پاکستان کو کسی بحران کا سامنا کرنا پڑا تو اورسیزکمیونٹی نے محب وطنی کا علی ثبوت پیش کرتے ہوئے ہر قسم کی قربانی دی اور پاکستان کو بہت بڑے بڑے بحرانوں سے نکالا پس اس سے ثابت ہوتا ہے کہ اورسیز میں رہنے والے پاکستانیوں کے دلوں میں پاکستان بہت زیادہ دھڑکتا ہے مقررین نے کہا کہ پاکستان کی حکومت اور ذمہ داران کو چاہیے کہ پاکستان کو جلدازجلد تمام بحرانوں سے نکال کر ترقی یافتہ ممالک کی صف میں لا کھڑا کریں مقررین کا کہنا تھا کہ پاکستان کے پاس بہت سے وسائل ہیں ان وسائل کا صحیح طریقے سے استعمال کرنا ضروری ہے مقررین نے کہا کہ جب بھی 14 اگست کا دن آتا ہے یا 6 ستمبر 23 مارچ یا کوئی بھی ایسا دن آتا ہے پاکستان کے حوالے سے ہم بہت جوش و جذبہ دکھاتے ہیں یہ جوش و جذبہ ہر ایک دن ہر ایک وقت ہر ایک لمحہ رہنا چاہیے تاکہ ہمارا پاکستان بہت جلد ترقی کرے مقررین کا کہنا تھا کہ پاکستان میں کوئی ایسا شعبہ رہ نہیں گیا جس میں پاکستان نے عظیم لوگ پیدا نہ کئیے ہوں اور ان عظیم لوگوں کی وجہ سے پاکستان کو پوری دنیا میں بہت زیادہ شہرت ملی مگر ان عظیم لوگوں کی قدر کرنا ہم سب کا فرض ہے پروگرام کے آخر میں جشن آزادی کے حوالے سے یو کے پاکستان بزنس کونسل پاکستان آفس اسلام آباد میں کیک بھی کاٹا گیا ۔ پروگرام کا باقاعدہ آغاز قومی ترانے اور تلاوت قرآن سے کیا گیا ۔

Tags: No tags
0

Add a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *